افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کی بحالی کے لیے حکومت پاکستان کا بڑا فیصلہ

افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کی واہگہ بارڈر سے بحالی کا اعلان

اسلام آباد: حکومت پاکستان نے افغان حکومت کی طرف سے پاکستان کو خصوصی درخواست کے بعد واہگہ بارڈر کو افغان ٹرانزٹ ٹریڈ  کے لئے کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت پاکستان نے افغان راہداری تجارت کو بحال کرنے کے لئے ایک بڑا فیصلہ لیا ہے۔ دفتر خارجہ کے ترجمان نے بتایا کہ واہگہ بارڈر کو افغان ٹرانزٹ تجارت کے لئے کھول دیا جائے گا۔
ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ تاجپوشی کے عمل میں تمام ایس او پیز اور پروٹوکول کو مدنظر رکھا جائے گا۔ یہ فیصلہ افغان حکومت کی پاکستان سے خصوصی درخواست پر کیا گیا۔ پاکستان نے افغان ٹرانزٹ تجارتی معاہدے کے تحت اپنا وعدہ پورا کیا۔

ترجمان کا مزید کہنا ہے کہ معاہدے کے تحت پاکستان نے دوطرفہ تجارت کا آغاز کیا ہے اور پاکستان اور افغانستان کے مابین تجارت کو سابقہ پوزیشن پر بحال کیا جائے گا۔
دفتر خارجہ کے مطابق ، پاکستان افغانستان کے ساتھ تمام شعبوں میں دوطرفہ تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کے لئے پرعزم ہے۔ ان علاقوں میں معاہدے کے مطابق تجارت اور افغان ٹرانزٹ تجارت کی سہولت شامل ہے۔

یاد رہے کہ پاکستان نے 22 جون کو پاک افغان بارڈر کو دوطرفہ تجارت کے لئے کھولنے کا اعلان کیا تھا۔ چار ماہ کے بعد ، افغانستان سے پاکستان کو درآمدات بحال کردیں گی جبکہ قندھار میں موجود پاکستانی قونصل خانہ نے افغان تاجروں کو یقین دہانی کرائی۔
دفتر خارجہ کے مطابق ، پاکستان افغانستان کے ساتھ تمام شعبوں میں دوطرفہ تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کے لئے پرعزم ہے۔ ان علاقوں میں معاہدے کے مطابق تجارت اور افغان ٹرانزٹ تجارت کی سہولت شامل ہے۔
واضح رہے کہ کرونا کے پھیلنے کے بعد ، دنیا بھر کے دیگر ممالک کی طرح ، پاکستان نے بھی ہمسایہ ممالک کے ساتھ اپنی سرحدی گزرگاہوں کو عارضی طور پر
آمدورفت کے لئے بند کردیا تھا۔

شکریہ اے آر وائی

مزید پڑھیں

پاکستان:ایک دن میں 2521 نئے کیس ، 74 اموات

(Visited 4 times, 1 visits today)

افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کی واہگہ بارڈر سے بحالی کا اعلان” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں